اشتہار

تازہ ترین

Post Top Ad

اتوار، 23 جون، 2019

ملاکنڈ یونیورسٹی اور مختلف اداروں کے مابین معاہدوں سے جامعہ ملاکنڈ میں تحقیق اور درس وتدریس کے شعبو ں کو تقویت ملے گی.ڈاکٹر گل زمان



چکدرہ( احمد شاہ ) ملاکنڈ یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسرڈاکٹر گل زمان کے زیرصدارت اجلاس میں یونیورسٹی اورمختلف اداروں کے مابین معاہدے،معاہدوں کے مطابق انڈسٹری،مقامی کاروبار مارکیٹنگ، سیاحت، کاشتکاری، زیتون کے پیداوار،مائنز سٹون،تحقیق اور درس وتدریس کے شعبوں میں بہتری لانے سمیت مقامی معیشت مستحکم کرنے اور آبادی کو ریلیف دینے کے حوالے سے کام کیاجائے گا،جن اداروں کیساتھ باہمی اشتراک اور تعاون کے معاہدوں کی یاداشت پر دستخط کئے گئے ان میں بلیر اینڈ کمپنی(رجسٹرڈ)تالاش لوئر دیر،چیمبرآف کامرس اینڈ انڈسٹریز لوئر دیر،ماﺅنٹ سٹون مائننگ کارپوریشن،فارم سروسز سنٹر آدینزئی اور پاکستان پارک اینڈ لڑم ٹورازم شامل ہیں جبکہ ایس آر ایس پی ،پی سی ایس آئی آرلیبارٹریزپشاور ،اے آر آئی ترناب،اے آر آئی پیر سباق اور نیفاپشاور ،ایگریکلچر ریسرچ انسٹیٹیوٹ سوات بھی سرمایہ کاری میں شراکت دارہوں گی، معاہدوں کے تحت زیتون آئل، زیتون گرین ٹی،زیتون اچارسمیت مقامی ٹماٹر،گندم اور دیگر سبزیوں،یگر پیداوار کافروغ،زیتون کے مختلف نئے اقسام پر تحقیق ،ترسیل اور ملک بھر میں اس کی مارکیٹنگ کی جائے گی،بائیوٹیکنالوجی، باٹنی، فارمیسی، کامرس اینڈ منیجمنٹ سائسز،سوشیالوجی،سوشل ورک،سمیت ملاکنڈ یونیورسٹی کے دیگر شعبے مذکورہ اداروں کو تکینکی مدد فراہم کریگی جبکہ اس سے جامعہ ملاکنڈ میں تحقیق اور درس وتدریس کے شعبو ں کو تقویت ملے گی،معاہدوں کی یاداشت کے خدوخال کے مطابق باہمی اشتراک کی سرگرمیوں کے فروغ اور اصل مسودے کے مطابق کام چلانے کی غرض سے باقاعدہ ویب سائیٹ بھی قائم کیاجائے گا جس کے دوررس نتائج برآمد ہوں گے۔

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

Post Top Ad

صفحات