اشتہار

تازہ ترین

Post Top Ad

منگل، 6 اگست، 2019

کانگو وائرس کی روک تھام کے لئے بھرپور اقدامات کیے جائیں، محب اللہ خان




سوات:- خیبر پختونخوا کے وزیر زراعت و لائیوسٹاک محب اللہ خان کی زیر صدارت کانگو کی روک تھام کے حوالے سے ایک اہم اجلاس منگل کے روز پشاور میں منعقد ہوا اجلاس میں سیکرٹری زراعت لائیواسٹاک محمد اسرار خان، ڈی جی لائیوسٹاک توسیع ڈاکٹر شیر محمد، ڈائریکٹر ضم شدہ اضلاع ملک آیاز وزیر اور صوبہ بھر کے ضلعی لائیو سٹاک افسران بھی موجود تھے۔ اجلاس میں کانگو وائرس سے متعلق ڈی جی لائیو سٹاک توسیع ڈاکٹر شیر محمد نے وزیر زراعت کو تفصیلی بریفنگ دی اور اب تک محکمے کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات کے حوالے سے آگاہ کیا۔ا صوبائی وزیر کو بتایا گیا کہ اب تک صوبے میں مختلف مقامات پرمحکمہ لائیو سٹاک نے کانگو کی روک تھام کے لیے 150 چیک پوسٹیں اور 38 موبائل ویٹرنری کلینک قائم کی ہیں اور اس عمل کی تکمیل کے لیے بارہ سو ملازمین کو ذمہ داریاں سونپی گئی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ کانگو بخار کی روک تھام کیلئے دو کروڑ 80 لاکھ مویشیوں پر سپرے کیے گئے ہیں اور صوبہ بھر میں محکمہ امور حیوانات اس سلسلے میں سرگرم عمل ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ کانگو بخار سے بچاؤ کے لیے ضروری ہے کہ جانور اور ان کے باڑوں کو چچڑوں سے محفوظ رکھنے کے لئے خصوصی اقدامات کیا جائیں اور صفائی کا خاص خیال رکھا جائے۔ صوبائی وزیر لائیو اسٹاک نے محکمے کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات پر اطمینان کا اظہار کیا تاہم متعلقہ افسران کو ہدایت کی کہ وہ فیلڈ میں اپنی کارکردگی عوامی توقعات کے مطابق سرانجام دیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ خود بھی سیکرٹری زراعت و لائیواسٹاک کے ہمراہ صوبے کے مختلف علاقوں میں چھاپے ماریں گے اور مویشیوں کی منڈیوں میں جہاں سپرے وغیرہ کے لئے اقدامات اٹھانے میں سستی برتی گئی تو متعلقہ عملہ کے خلاف کاروائی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ کاعملہ فیلڈ میں اپنی کارکردگی عوام کے سامنے پیش کرے اور حتیٰ الوسع خدمات میں کمی نہ رہنے دے۔ صوبائی وزیر زراعت لائیواسٹاک نے بعدازاں ڈی جی لائیوسٹاک کے دفتر میں کانفرنس روم کا بھی افتتاح کیا۔

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

Post Top Ad

صفحات